کراچی سمیت سندھ بھر میں مزہد لاک ڈاون کے تحت پابندیاں بڑھائی جائینگی۔

کراچی: پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کی سندھ حکومت نے شہریوں کی نقل و حرکت روکنے کے لیے مزید سخت پابندیاں لگانے کا فیصلہ کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق صوبہ سندھ میں کورونا وائرس کے مریضوں کی تعداد بڑھنے اور شہریوں کی طرف سے لاک ڈاؤن پر عمل نہ کرنے کے بعد سندھ حکومت نے شہریوں کی نقل و حرکت روکنے کے لیے مزید سخت اقدامات اٹھانے پر غور شروع کر دیا ہے۔

ذرائع کے مطابق وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے انتہائی اقدامات کے لیے مشاورت شروع کر دی ہے، کراچی سمیت سندھ بھر میں مزہد لاک ڈاون کے تحت پابندیاں بڑھائی جائینگی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ شہریوں نے لاک ڈاون کی عائد پابندیوں پر مکمل عمل نہیں کیا، عوامی نقل وحرکت محدود نہ ہونے کے سبب سندھ حکومت نے پابندیاں بڑھانے پر غور شروع کر دیا ہے۔ پابندیاں بڑھانے کا حتمی فیصلہ ہونے پر باضابطہ ویڈیو بیان جاری کیا جائے گا۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پو ٹویٹ کرتے ہوئے صوبائی وزیر اطلاعات ناصر شاہ کاکہنا تھا کہ کورونا وائرس کے خلاف جنگ کے لئے دنیا کا سب سے مہلک ہتھیارصرف ’سیلف آئسولیشن‘ ہے۔ لہذا اس مہلک ہتھیار ’’سیلف آئسولیشن‘‘ کواستعمال کرِیں، گھروں میں رہیں اور کورونا وائرس کوشکست دینے میں سندھ حکومت کاساتھ دیجیے- یاد رہےخود کو گھروں تک محدودکرنااس جنگ میں فتح کےدروازے کی کنجی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں