پیر سے تعلیمی ادارے، شادی ہالز، تقریبات، درگاہیں سب بند

کراچی:(میڈیا ون نیوز) کورونا کے بڑھتے کیسز کے پیش نظر سندھ حکومت نے پیر سے تعلیمی ادارے، شادی ہالز، تقریبات، درگاہیں سب بند کرنے کے احکامات دے دیئے۔ دکانیں، شاپنگ مالز اور مارکیٹس بھی شام 6 بجے بند ہونگی۔

وزیراعلی سندھ کی زیر صدارت صوبائی ٹاسک فورس اجلاس میں بڑے فیصلے کئے گئے۔ کریانہ، بیکری اور فارمیسی کھلی رہیں گی، تعلیمی ادارے بھی بند کرنے کا فیصلہ جبکہ امتحانات شیڈول کے مطابق ہوں گے۔

صوبے میں پیر سے شادی ہال اور دیگر تقریبات پر بھی پابندی عائد کر دی گئی۔ ریسٹورنٹس میں انڈور اور آوٹ ڈور ڈائننگ بند صرف ٹیک اووے کی اجازت ہوگی۔ سرکاری اور نجی سیکٹر میں 50 فیصد عملے کو کام کی اجازت ہوگی جبکہ پیر سے درگاہیں بھی بند کر دی جائیں گی۔ اجلاس میں جمعہ اور اتوار کو سیف ڈیز قرار دے کر سب بند رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

وزیراعلیٰ سندھ نے شہریوں کو ویکسین لگوانے کا پیغام بھیجنے کیلئے پی ٹی اے کو خط لکھنے کا فیصلہ بھی کیا ہے اور کہا ایک ہفتے میں ویکسین نہ لگوانے والوں کی سم بلاک کی جائے، ایسے سرکاری ملازمین جنہوں نے ویکسین نہیں لگوائی ان کی تنخواہیں روکنے کا بھی فیصلہ کیا جائے گا۔ اس حوالے سے وزیراعلیٰ سندھ نے سیکریٹری فنانس کو اے جی سندھ سے رابطہ کرنے کی ہدایت دے دی۔

اجلاس میں بتایا گیا کہ سندھ میں کورونا کے مثبت کیسز کی شرح 10.3 فیصد ہوگئی۔ کراچی میں گزشتہ روز مثبت کیسز کی شرح 21.58 فیصد تھی۔ وزیراعلی سندھ نے کہا کہ صورتحال انتہائی تشویشناک اور مزید خراب ہو سکتی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں