ٹی ٹی پی کےمنقسم دھڑوں کوبھارتی حمایت سے افغانستان میں اکٹھا کیا گیا۔ اقوام متحدہ مانیٹرنگ ٹیم

اسلام آباد: (میڈیا ون نیوز) دہشتگردی کیخلاف پاکستانی کوششوں کا عالمی سطح پر اعتراف کر لیا گیا، ٹی ٹی پی کےمنقسم دھڑوں کوبھارتی حمایت سے افغانستان میں اکٹھا کیا گیا۔ ٹی ٹی پی، جے یو اے پاکستان کیلئے خطرہ ہیں، اقوام متحدہ مانیٹرنگ ٹیم نے 27ویں رپورٹ میں بڑے انکشافات کر دیئے۔

اقوام متحدہ کی سکیورٹی کونسل کی تازہ رپورٹ میں اہم انکشافات سامنے آئے ہیں اور بھارت کی الزام تراشیوں کے باوجود دہشت گردوں کے خلاف پاکستان کی کارروائیوں کا اعتراف کیا گیا ہے۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ پاکستان دہشتگرد تنظیموں اور گروپوں کے خلاف کارروائی کے لئے ثابت قدم ہے، دہشت گرد تنظیموں کے بھارتی حمایت پر ڈی جی آئی ایس پی آر نے ڈوزیئر پیش کیا، پاکستان نے ٹی ٹی پی اور جے یو اے کو بھارتی فنڈنگ پر اقوام متحدہ کو ڈوزیئر بھیجا۔

رپورٹ میں کہا گیا کہ پانچ گروپوں نے ٹی ٹی پی سے اتحاد کا اعلان کیا جس سے ٹی ٹی پی کی طاقت میں اضافہ ہوا، حملوں میں تیزی آئی۔ ٹی ٹی پی انضمام سے پاکستان اور خطے کے لئے دہشت گردی کے خطرے میں اضافہ ہوا، پاکستان نے ٹی ٹی پی کی طرف سے دہشت گردی کے خطرے کو مستقل طور پر اجاگر کیا جب کہ امریکا نے افغانستان میں مقیم ٹی ٹی پی ، جے یو اے کے دہشت گردوں کو پاکستان کے لئے خطرہ تسلیم کیا۔ یو این مانیٹرنگ رپورٹ میں پاکستان میں دہشت گردوں کے مالی سہولت کاروں کی گرفتاری اور اداروں کے اثاثے منجمد کرنے کی نشاندہی کی گئی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں