فتح خوش آئندہ علامت ہے لیکن ہمیں اپنے کھیل میں بہتری لانی ہو گی۔ کپتان بابر اعظم

لاہور: (ویب ڈیسک) پاکستان کرکٹ ٹیم کےکپتان بابر اعظم کا 18 سال بعد پہلی ٹیسٹ سیریز میں فتح کے بعد کہنا ہے کہ ہم زیادہ بہتر کارکردگی کا مظاہرہ کر سکتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق قومی ٹیم کے کپتان بابر اعظم کی قیادت میں قومی ٹیم نے راولپنڈی میں دوسرے ٹیسٹ کے آخری روز پروٹیز ٹیم کو95 رنز سے شکست دے کر سیریز میں کلین سویپ کیا ہے۔

فرانسیسی خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق پاکستان کی پہلی بار قیادت کرنے والے نوجوان کپتان نے جیت کے بعد خوشی سے سرشار لہجے میں کہا کہ یہ ایک خوش آئندہ علامت ہے لیکن ہمیں اپنے کھیل میں بہتری لانی ہو گی۔

بابراعظم نے مسلسل ہار کے بعد پاکستانی ٹیم کی اس فتح پر کہا کہ جیت کی بہت ضرورت تھی اور سیریز جیتنے کی بہترین بات یہ ہے کہ اب ہم ٹیسٹ رینکنگ میں پانچویں نمبر پر ہیں۔

پاکستان کی جیت نے اسے انٹرنیشنل کرکٹ کونسل کی ٹیسٹ رینکنگ میں پروٹیز سے اوپر پہنچا دیا ہے۔ گرین شرٹس دو درجے ترقی پا کر پانچویں نمبر پر پہنچ گئے، جو اس کی جنوری 2017 کے بعد بہترین ٹیسٹ رینکنگ ہے۔

پاکستان کو یہ فتح نیوزی لینڈ سے دو صفر کی ذلت آمیز شکست کے بعد ملی ہے۔ بابر اعظم یہ سیریز انگوٹھے میں فریکچر ہونے کی وجہ سے کھیل نہیں پائے تھے۔

بابر اعظم کا کہنا ہے کہ ٹیم کو اپنے مکمل پوٹینشل کے ساتھ کارکردگی دکھانے میں وقت لگے گا کیونکہ یہ نئی ٹیم ہے اور میں بھی بطور کپتان نیا ہوں۔ اس کے علاوہ ہم نے سکواڈ میں بھی کچھ تبدیلیاں کی ہیں۔

قومی کپتان نے مزید کہا کہ جب آپ جیتتے ہیں تو آپ کا اعتماد بڑھتا ہے اور مجھے یقین ہے کہ جنوبی افریقہ کے خلاف اس فتح سے ہم میں بہتری آئے گی۔ امید ہے کہ پاکستانی ٹیم اپنی یہ کارکردگی برقرار رکھے گی اور غیر ملکی دوروں میں بھی فتح حاصل کرے گی۔

ٹیسٹ سیریز کے بعد پاکستانی ٹیم اب لاہور میں جنوبی افریقہ کے خلاف 11، 13 اور 14 فروری کو تین ٹی20 میچز کھیلے گی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں