11ماہ کے وقفے کے بعد ڈالر کی قدر 158روپے سے بھی نیچے۔

کراچی: (میڈیا ون نیوز) زرمبادلہ کی دونوں مارکیٹوں میں منگل کو روپے کی نسبت ڈالر کی قدر کو تنزلی کا سامنا رہا اور زرمبادلہ کی دونوں مارکیٹوں میں11ماہ کے وقفے کے بعد ڈالر کی قدر 158روپے سے بھی نیچے آگئی۔

ایشیائی ترقیاتی بینک کی سبسڈری کی جانب سے پاکستان کو تیل وگیس کی درآمدات کے لیے 1ارب 10کروڑ ڈالر کے موخر ادائیگیوں کے قرضے جاری کرنے اور قطر کے ساتھ آئندہ سال سے 10سال کے لیے سستی ایل این جی درآمد کرنے کے معاہدے جیسے عوامل کے باعث ڈالر کی قدر میں تنزلی آئی.

ایکس چینج کمپنیز ایسوسی ایشن آف پاکستان نے روشن ڈیجیٹل اکاؤنٹ میں سمندرپار مقیم پاکستانیوں کی وسیر پیمانے پر سرمایہ کاری کے تناظر میں رواں ماہ ڈالر کی قدر مزید گھٹ کر 155روپے کی سطح تک آنے کی پیش گوئی کردی ہے۔
منگل کو ڈالر کے انٹربینک ریٹ میں اتارچڑھاؤ کے بعد 18پیسے کی کمی واقع ہوئی جس سے انٹربینک میں ڈالر کی قدر گھٹ کر 157روپے 84پیسے کی سطح پر بند ہوئی۔ اسی طرح اوپن کرنسی مارکیٹ میں بھی ڈالر کی قدر 40پیسے کی کمی سے 157روپے 90پیسے کی سطح پر بند ہوئی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں